’فلسطینی ریاست کا قیام ہماری اور آپ کی زندگی میں ہی ہوگا‘


جی ہاں، کیوں نہیں! عرفات کا جواب بازگشت کی طرح پھر گونج رہا ہے ’ہاں ضرور، فلسطینی ریاست قائم ہوگی‘۔

یہ تمہید اس لیے کہ اب شک و شبہ نہیں کیا جا سکتا ہے کہ اسرائیل اور اس کے حامی مغربی ممالک ایڑی چوٹی کا زور کیوں نہ لگا لیں فلسطینی جنگ آزادی کو کچلا نہیں جا سکتا۔

ذرا تاریخ پر نگاہ ڈالیے۔ غلام قوموں نے آزادی کے لیے بڑی قربانیاں دے کر اور لمبے عرصے کی جدوجہد کے بعد حاصل کی۔ اب فلسطینی اس تاریخ کو دوہرا رہے ہیں۔ لیکن یہ حقیقت ہے کہ فلسطینیوں کی قربانی کی باری ہے۔ ہم ہندوستانیوں کو 100 برس سے زیادہ لگا آزادی حاصل کرنے میں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *