کووڈ میں ملیریا کی دوا ’ہائیڈروکسی کلوروکوئن‘ نے لی 17 ہزار لوگوں کی جان! ریسرچ میں بڑا انکشاف


بایومیڈیسن اینڈ فارماکوتھیراپی کے فروری شمارہ میں شائع ریسرچ سے پتہ چلتا ہے کہ اموات کی تعداد میں اضافہ حرکت قلب میں یکسانیت کی کمی اور پٹھوں کی کمزوری جیسے منفی اثرات کے سبب ہوا۔

کورونا وائرس
user

ایک نئے ریسرچ میں کووڈ-19 کے علاج کے لیے ڈاکٹروں کے ذریعہ دی گئی ہائیڈروکی کلوروکوئن (ایچ سی کیو) دوا کو تقریباً 17 ہزار اموات سے جوڑا گیا ہے۔ یہ ملیریا کی دوا ہے جس کا استعمال کووڈ-19 کے علاج میں بھی بڑے پیمانے پر کیا گیا تھا۔

’نیوز ویک‘ کی رپورٹ کے مطابق فرانسیسی محققین کے ذریعہ کی گئی ایک تحقیق میں پایا گیا ہے کہ مارچ سے جولائی 2020 تک کووڈ-19 کی پہلی لہر کے دوران بیماری کے سبب اسپتال میں داخل مریضوں کو ایچ سی کیو دیے جانے کے بعد چھ ممالک میں تقریباً 17 ہزار لوگوں کی موت ہو گئی۔

کووڈ-19 وبا کے دوران اُس وقت کے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے امریکیوں سے ایچ سی کیو لینے کی گزارش کی تھی جو کہ ملیریا کے خلاف استعمال کی جانے والی دوا ہے۔ انھوں نے دعویٰ کیا تھا کہ وہ خود ’چمتکاری‘ دوا لے رہے تھے۔

بہرحال، بایومیڈیسن اینڈ فارماکوتھیراپی کے فروری شمارہ میں شائع تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ اموات کی تعداد مین اضافہ دل کی رفتار میں یکسانیت کی کمی اور پٹھوں کی کمزوری جیسے منفی اثرات کے سبب ہوا۔ ’نیوز ویک‘ کی رپورٹ کے مطابق جن ممالک میں اسٹڈی کیا گیا ان میں امریکہ، ترکی، بلجیم، فرانس، اسپین اور اٹلی شامل تھے۔ امریکہ میں اس وجہ سے سب سے زیادہ 12739 اموات ہوئیں۔ اس کے بعد اسپین میں 1895، اٹلی میں 1822، بلجیم میں 240، فرانس میں 199 اور ترکی میں 95 اموات ہوئیں۔ محققین نے کہا کہ اموات کی تعداد بہت زیادہ ہو سکتی ہے کیونکہ ان کی اسٹڈی میں مارچ اور جولائی 2020 کے درمیان صرف چھ ممالک کو شامل کیا گیا ہے۔ سائنسدانوں نے مختلف اسٹڈی کا تجزیہ کیا جس میں کووڈ-19 کے سبب اسپتال میں داخل ہونے اور دوا کے رابطہ اور اس سے متعلق جوکھم پر نظر رکھی گئی۔

’نیوز ویک‘ کی رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس کے قہر کے بعد سائنسدانوں نے مشورہ دیا کہ ایچ سی کیو خطرناک وائرس کے علاج میں اثردار ہو سکتا ہے۔ امریکہ کے ایف ڈی اے نے 28 مارچ 2020 کو ایمرجنسی استعمال کے لیے دوا کو منظوری دے دی اور علاج کے لیے ٹیسٹنگ شروع کر دی۔ حالانکہ جون 2020 میں ایف ڈی اے نے دوا کے ایمرجنسی استعمال کو رد کر دیا کیونکہ نیو انگلینڈ جرنل آف میڈیسن کی ایک اسٹڈی سمیت کئی تحقیق میں پایا گیا کہ ایچ سی کیو کا کووڈ پر کوئی فائدہ نہیں تھا اور اس سے موت کے جوکھم میں قابل ذکر اضافہ ہوا۔ ایف ڈی اے نے 15 جون 2020 کو ایمرجنسی استعمال اتھارٹی کو رد کر دیا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;

Leave A Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *